صفحۂ اول / تازہ ترین / موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد کی والدہ کے بعد اس کی بیوی کو بھی پولیس نے حراست میں لے لیا

موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد کی والدہ کے بعد اس کی بیوی کو بھی پولیس نے حراست میں لے لیا

آن لائن: موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد کی والدہ کے بعد اس کی بیوی کو بھی پولیس نے حراست میں لے لیا ہے تاہم وہ خود ابھی تک گرفتارنہیں ہوسکا۔

گزشتہ رات قصور میں 2 کلومیٹر کے دائرے میں سرچ آپریشن کیا گیا۔

اس دوران اس علاقے کے کھیتوں میں تلاشی لی گئی مگر پولیس کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔

اس سے پہلے ملزم کے 5 مزید رشتہ داروں کو بھی پولیس نے حراست میں لے لیا ہے۔

پولیس کے مطابق زیرحراست افراد سے عابد کا دو روز قبل رابطہ ہوا تھا۔

ملزم عابد کی بیوی بشریٰ کو پولیس نے مانگا منڈی سے حراست میں لیا ہے۔

وہ پولیس کے چھاپے کے دوران بیٹی کو گھر پر چھوڑ کر اپنے شوہر سمیت فرار ہو گئی تھی۔

عابد کے ساتھ بشریٰ بی بی کی یہ دوسری شادی ہے۔ پہلے شوہر سے اس کی ایک بیٹی ہے۔

بشریٰ کا تعلق ضلع فیصل آباد کی تحصیل تاندلیانوالہ سے ہے۔

یاد رہے کہ 9 ستمبر کو لاہور کے علاقے گجرپورہ میں موٹروے پر ایک خاتون کی گاڑی پٹرول ختم ہونے کے باعث بند ہو گئی۔

اور دو افراد نے گاڑی کے شیشے توڑ کر خاتون کے اس کے بچوں کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنایا۔