صفحۂ اول / تازہ ترین / ملک میں کوئی وفاقی سیکرٹری کام نہیں کررہا:چیف جسٹس کا اظہار برہمی

ملک میں کوئی وفاقی سیکرٹری کام نہیں کررہا:چیف جسٹس کا اظہار برہمی

آن لائن: چیف جسٹس گلزار احمد نے سٹیل ملز ملازمین کی پروموشن کے متعلق کیس کی سماعت کے دوران سیکرٹریز کے کام نہ کرنے پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے۔

بیورو کریسی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے چیف جسٹس نے کہا کہ ملک میں کوئی وفاقی سیکرٹری کام نہیں کررہا، تمام سیکرٹریز صرف لیٹربازی ہی کررہے ہیں جوکلرکس کاکام ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ سمجھ نہیں آتا حکومت نے سیکرٹریز کو رکھاہی کیوں ہوا ہے؟ سیکرٹریز کے کام نہ کرنے کی وجہ سے ہی ملک کاستیاناس ہوا ہے۔

سیکرٹریز کو ڈر ہے کہیں نیب انہیں نہ پکڑ لے، پہلے بھی تو سیکرٹریز کام کرتے تھے اب پتا نہیں کیاہوگیا۔

 نجی ٹی وی 92 نیوز کے مطابق سپریم کورٹ میں سٹیل ملز ملازمین کی پروموشن سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔

چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں بنچ نے کیس کی سماعت کی۔ چیف جسٹس پاکستان نے سٹیل ملز کی حالت زار کا ذمہ دار انتظامیہ کوقرار دیدیا۔

چیف جسٹس گلزاراحمد نے کہاکہ انتظامیہ کی ملی بھگت کے بغیر کوئی غلط کام نہیں ہوسکتا۔ کیا حکومت نے سٹیل ملز انتظامیہ کیخلاف کارروائی کی؟۔

چیف جسٹس نے سٹیل ملز انتظامیہ کی سخت سرزنش کرتے ہوئے کہاکہ ملز بند پڑی ہے تو انتظامیہ کیوں رکھی ہوئی ہے؟۔

بند سٹیل ملز کو کسی ایم ڈی یا چیف ایگزیکٹو کی ضرورت نہیں۔

سٹیل ملز انتظامیہ اور افسران قومی خزانے پر بوجھ ہیں۔ ملازمین سے پہلے تمام افسران کو سٹیل ملز سے نکالیں۔