صفحۂ اول / پاکستان / وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ فوج ملک کو اکٹھا نہیں رکھ سکتی ملک کو عوام اکٹھا رکھتی ہے

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ فوج ملک کو اکٹھا نہیں رکھ سکتی ملک کو عوام اکٹھا رکھتی ہے

news in urdu

راولپنڈی (ویب ڈیسک): وزیراعظم پاکستان عمران خان نےکہا ہے کہ مشرقی پاکستان ہم سے اس لیے الگ ہوا کیوں کہ پاکستان کانظریہ پیچھے چلا گیا تھا تومشرقی پاکستان کےلوگوں نےکہا کہ ہم کیوں پاکستان کاحصہ بن کررہیں۔کسی قوم کاجب نظریہ ختم ہوجاتا ہے تو قوم بھی ختم ہو جاتی ہے۔

سوہاوہ میں القادر یونیورسٹی  کی سنگ بنیاد رکھنے کےموقع پر تقریب میں خطاب کےدوران   وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ فوج ملک کو اکٹھا نہیں رکھ سکتی ملک کو عوام اکٹھا رکھتی ہےعوام ریاست کا حصہ بننا چاہتی ہے کیونکہ ریاست عوام کی ضروریات پوری کرتی ہے اور انصاف فراہم کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مشرقی پاکستان کے لوگوں کو انصاف نہیں ملاان میں احساس محرومی آگیا مشرقی پاکستان کے لوگوں کو لگا کہ مغربی پاکستان سے انہیں طاقت منتقل نہیں ہو رہی۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہم کہتے ہیں کہ مشرقی پاکستان بھارت نے توڑ دیا غلطی ہماری تھی ہم نے اپنے لوگوں کو انصاف نہیں دیا بھارت نے تو کوشش کرنی تھی جب ہم نے موقع دیا تو انہوں نے فائدہ اٹھا یا ۔انہوں نے کہا کہ اگر ہم نے آج بھی لوگوں کو انصا ف فراہم نہ کیا تو مشکل پیدا ہو سکتی ہے فاٹا میں لوگوں کے برے حالات ہیں ان کی مدد کرنی چاہیےبلوچستان میں لوگ پیچھے رہ گئے ہیں۔

سوہاوہ میں القادر یونیورسٹی کی سنگ بنیاد رکھنے سے متعلق تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس یونیورسٹی میں دو کام کرنے ہیں ایک آرٹی فیشنل انٹیلی جنس اور ٹیکنالوجی کی تعلیم دینی ہے اور سب سے اہم کام نوجوانوں کو صوفی ازم کی تعلیم دینی ہے تاکہ ان میں لیڈر شپ کوالٹی پیدا ہو۔

مزید خبریں